World

آٹا چوری کے الزام پر2 نوجوانوں کو بدترین تشدد کا نشانہ بنا گیا، مظفر گڑھ

Summary

مظفرگڑھ: (عبدلغفار)شاہ جمال میں ایک من آٹا چوری کرنے کے شبہ پر پنچائیت کی موجودگی میں مشتبہ نوجوانوں کو آٹا چکی مشین سے باندھ کر بدترین تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔  35000 روپے” چٹی ” (جرمانہ) ادائیگی کے بعد رہائی […]

مظفرگڑھ: (عبدلغفار)شاہ جمال میں ایک من آٹا چوری کرنے کے شبہ پر پنچائیت کی موجودگی میں مشتبہ نوجوانوں کو آٹا چکی مشین سے باندھ کر بدترین تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔ 

35000 روپے” چٹی ” (جرمانہ) ادائیگی کے بعد رہائی ملی۔ غریب نوجوانوں کے خلاف آٹا چکی مالک اور مقامی زمیندار کے انسانیت دشمن اقدام کے خلاف عوامی و سماجی حلقوں میں سخت تشویش  ۔ ڈی پی او ضلع مظفرگڑھ اور آر پی او ڈیرہ غازیخان سے فوری نوٹس لے کر تشددکے مرتکب افراد کے خلاف مقدمے کا اندراج ، چٹی کے طور پر لی گئی رقم واپس دلوانے کا مطالبہ۔ تشدد کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ھونے کے باوجود بھی شاہ جمال پولیس وقوع سے لاعلم رہی۔ 
مبینہ تفصیل کے مطابق ایک من  آٹا چوری ھونے پر آٹا چکی مالک نے اپنی ہی عدالت لگوا لی۔  گزشتہ شب موضع نوہن والی تھانہ شاہ جمال میں نامعلوم چور نے رات کی تاریکی میں غفار لشاری نامی شخص کی  آٹا چکی سے ایک من آٹا چوری کرلیا۔ اسی موضع کے رہائشی دو نوجوان  یتیم لڑکا عامر ولد شبیر میٹ مرحوم اور محمد کاشف  موٹر سائیکل پر جارہے تھے کہ آٹا چکی مالک نے روک کر ان پر آٹا چوری میں ملوث ہونے کا الزام عائد کیا۔ نوجوانوں نے آٹا چوری میں ملوث ہونے کے الزام کو جھوٹ قرار دےدیا۔ جس پر عبدالغفار لشاری اپنے قریبی ساتھیوں کو بلا کر   دونوں نوجوانوں کو آٹا چکی مشین پر   رسیوں سے  باندھ کر  موٹر کے بیلٹ سے  بد ترین تشدد  کا نشانہ بناتا رہا۔ بعد ازاں سابق وائس چیئرمین یونین کونسل نوہن والی ، مقامی زمیندار چوہدری اشرف گجر کے ڈیرے پر فیصلے کے لئے لے گئے۔دوران فیصلہ نوجوانوں کو دوبارہ   آٹا  چکی  مشین سے باندھ کر انہیں انسانیت سوز سلوک کا نشانہ بنایا گیا۔ تشدد کی ویڈیو بھی بنائی گئی۔سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو جس میں  دونوں نوجوان اللہ رسول کے واسطے دے کر اپنی بے گناہی کی دوہائی دیتے  رہے۔  بعد ازاں سر پنچ اور زمیندار چوہدری اشرف گجر نے نوجوانوں پر پچاس ہزار روپے چٹی (جرمانہ) رکھی گئ۔ منت سماجت پر  35000 روپے چٹی رکھی گئ ۔جس کی ادائیگی پر  پر نوجوانوں کو ظلم و تشدد سے نجات ملی۔ محض ایک من آٹا چوری کرنے کے شبے میں نوجوانوں پر بدترین تشدد اور 35000 روپے جرمانے کی خبر نے اہل علاقہ میں سخت تشویش پائی گئ۔  اہل علاقہ نہ صرف اسکی شدید الفاظ میں مذمت کی ۔ بلکہ ڈی پی او ضلع مظفرگڑھ اور آر پی او ڈیرہ غازیخان سے استدعا کی ھے  کہ با اثر سرپنچ، سابق وائس چیئرمین یونین کونسل نوہن والی چوہدری اشرف گجر، چکی مالک غفار لاشاری اور بے گناہ غریب نوجوانوں پر تشدد کے مرتکب دیگر افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے۔ چٹی کے طور پر لی گئی رقم واپس کروائی جائے۔ انہیں ایسی کڑی سے کڑی سزا دی جائے کہ آئیندہ اقتدار و اختیار اور دولت کے نشے میں دھت کسی بھی شخص کو کسی غریب سے ایسے بہیمانہ، غیر انسانی سلوک کی جرآت نہ ہو سکے۔

READ MORE:  Feeling lucky? Google parent Alphabet Inc returns to sales growth

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *